rahat indori shayari Best sad ghazals poetry

Rahat indori shayari

rahat indori shayari Best sad ghazals poetry

جنازے پر مرے لکھ دینا یاروrahat indori shayari
محبت کرنے والا جا رہا ہے

راحت اندوری

Shayari love sad poetry ghazals best ever

कृपया अपने अंतिम संस्कार में मृत लिखें। प्रेमी आराम करने जा रहा है

زندگی بھر دور رہنے کی سزائیں رہ گئیں
میرے کیسہ میں مری وفائیں رہ گئیں

نوجواں بیٹوں کو شہروں کے تماشے لے اڑے
گاؤں کی جھولی میں کچھ مجبور مائیں رہ گئیں

بجھ گیا وحشی کبوتر کی ہوس کا گرم خون
نرم بستر پر تڑپتی فاختائیں رہ گئیں

ایک اک کر کے ہوئے رخصت مرے کنبے کے لوگ
گھر کے سناٹے سے ٹکراتی ہوائیں رہ گئیں

بادہ خانے شاعری نغمے لطیفے رتجگے
اپنے حصے میں یہی دیسی دوائیں رہ گئیں

راحت اندوری

आजीवन कारावास
मेरे मामले में, केवल मृतक ही बचे हैं

युवा बेटों को शहर के शो में ले जाएं
गाँव के झूले में कुछ मजबूर माँएँ रहती थीं

जंगली कबूतर की वासना का गर्म खून बुझ जाता है
मुलायम बिस्तर पर तड़पती तितलियाँ थीं

एक-एक करके, मृतक के परिवार की मृत्यु हो गई
घर से हवाएँ चलीं

बडा खाना कविता गीत चुटकुले रटजगे
ये उनके हिस्से की देसी दवाएं हैं

आराम

rahat indori shayari Best sad ghazals poetry

اگر خلاف ہیں ہونے دو جان تھوڑی ہے
یہ سب دھواں ہے کوئی آسمان تھوڑی ہے

لگے گی آگ تو آئیں گے گھر کئی زد میں
یہاں پہ صرف ہمارا مکان تھوڑی ہے

میں جانتا ہوں کہ دشمن بھی کم نہیں لیکن
ہماری طرح ہتھیلی پہ جان تھوڑی ہے

ہمارے منہ سے جو نکلے وہی صداقت ہے
ہمارے منہ میں تمہاری زبان تھوڑی ہے

جو آج صاحب مسند ہیں کل نہیں ہوں گے
کرائے دار ہیں ذاتی مکان تھوڑی ہے

سبھی کا خون ہے شامل یہاں کی مٹی میں
کسی کے باپ کا ہندوستان تھوڑی ہے​

راحت اندوری

https://shayari-urdu-hindi.com/motivational-poetry-motivational-shayari-in-urdu-hindi/

rahat indori shayari Best sad ghazals poetry

अगर वे इसके खिलाफ हैं, तो इसे होने दें
यह सब धुआँ है। थोड़ा सा आसमान है

आग लग जाएगी और घर मुश्किल से मारा जाएगा
हमारा घर बस यहीं थोड़ा सा है

मुझे पता है कि दुश्मन कोई कम नहीं है, लेकिन
हमारे हाथ की हथेली में थोड़ा जीवन है

सच वही है जो हमारे मुंह से निकलता है
आपकी जीभ हमारे मुंह में थोड़ी है

जो आज सत्ता में हैं वे कल सत्ता में नहीं रहेंगे
किरायेदारों के पास एक छोटा सा निजी घर है

सबका खून यहां की मिट्टी में है
किसी के पिता का भारत छोटा है

आराम

یہ خاک زادے جو رہتے ہیں بے زبان پڑے
اشارہ کر دیں تو سورج زمیں پہ آن پڑے

سکوت زیست کو آمادۂ بغاوت کر
لہو اچھال کہ کچھ زندگی میں جان پڑے

ہمارے شہر کی بینائیوں پہ روتے ہیں
تمام شہر کے منظر لہو لہان پڑے

اٹھے ہیں ہاتھ مرے حرمت زمیں کے لیے
مزا جب آئے کہ اب پاؤں آسمان پڑے

کسی مکین کی آمد کے انتظار میں ہیں
مرے محلے میں خالی کئی مکان پڑے

راحت اندوری

ये धूल-धूसरित बच्चे जो अवाक रहते हैं
अगर आप इशारा करेंगे, तो सूर्य पृथ्वी पर गिर जाएगा

मौन में विद्रोह करने के लिए तैयार
जीवन में कुछ जानने के लिए खून का बहना

हमारे शहर को देखते ही रो पड़ते हैं
पूरा शहर खून से लथपथ था

भूमि की पवित्रता के लिए हाथ उठाया
मजा तब आया जब पैर आसमान से गिरे

एक निवासी के आने का इंतजार
मरे के पड़ोस में कई खाली घर हैं

आराम

Love shayari romantic shayari Best sad poetry

Love shayari romantic shayari Best sad poetry

اگر خلاف ہیں ہونے دو جان تھوڑی ہے
یہ سب دھواں ہے کوئی آسمان تھوڑی ہے

لگے گی آگ تو آئیں گے گھر کئی زد میں
یہاں پہ صرف ہمارا مکان تھوڑی ہے

میں جانتا ہوں کہ دشمن بھی کم نہیں لیکن
ہماری طرح ہتھیلی پہ جان تھوڑی ہے

ہمارے منہ سے جو نکلے وہی صداقت ہے
ہمارے منہ میں تمہاری زبان تھوڑی ہے

جو آج صاحب مسند ہیں کل نہیں ہوں گے
کرائے دار ہیں ذاتی مکان تھوڑی ہے

سبھی کا خون ہے شامل یہاں کی مٹی میں
کسی کے باپ کا ہندوستان تھوڑی ہے​

راحت اندوری

https://cacke-recipe.com/coconut-spice-tart-all-recipe-homemade-recipe

دل دھڑکتا ہے نام پر تیرے
پر وہ پہلے سا ولولہ نہ رہا

جی رہا ہوں میں زندگی اب وہ
جس کو جینے میں کچھ مزہ نہ رہا

اتباف ابرک

https://shayari-urdu-hindi.com/shayari-hindi-shayari-urdu-2-line-shayari-best-shayari/

جون ایلیا

یہ غم کیا دل کی عادت ہے؟ نہیں تو
کسی سے کچھ شکایت ہے؟ نہیں تو
ہے وہ اک خواب بے تعبیر اس کو
بھلا دینے کی نیت ہے؟ نہیں تو
کسی کے بن، کسی کی یاد کے بن
جیئے جانے کی ہمت ہے؟ نہیں تو
کسی صورت بھی دل لگتا نہیں؟ ہاں
تو کچھ دن سے یہ حالت ہے؟ نہیں تو
ترے اس حال پر ہے سب کو حیرت
تجھے بھی اس پہ حیرت ہے؟ نہیں تو
وہ درویشی جو تج کر آ گیا تو
یہ دولت اس کی قیمت ہے؟ نہیں تو
ہم آہنگی نہیں دنیا سے تیری
تجھے اس پر ندامت ہے؟ نہیں تو
ہوا جو کچھ یہی مقسوم تھا کیا
یہی ساری حکایت ہے؟ نہیں تو
اذیت ناک امیدوں سے تجھ کو
اماں پانے کی حسرت ہے؟ نہیں تو
تو رہتا ہے خیال و خواب میں گم
تو اس کی وجہ فرصت ہے؟ نہیں تو
وہاں والوں سے ہے اتنی محبت
یہاں والوں سے نفرت ہے؟ نہیں تو
سبب جو اس جدائی کا بنا ہے
وہ مجھ سے خوبصورت ہے؟ نہیں تو

Love shayari romantic shayari Best sad poetry

غم کا ادراک کر لیا جائے
دل کو پھر خاک کر لیا جائے

پھر گھٹن ہو گئی گریباں میں
پھر اسے چاک کر لیا جائے

عاطف جاوید عاطف

romantic shayari Best sad poetry

زندگی بھر دور رہنے کی سزائیں رہ گئیں
میرے کیسہ میں مری وفائیں رہ گئیں

نوجواں بیٹوں کو شہروں کے تماشے لے اڑے
گاؤں کی جھولی میں کچھ مجبور مائیں رہ گئیں

بجھ گیا وحشی کبوتر کی ہوس کا گرم خون
نرم بستر پر تڑپتی فاختائیں رہ گئیں

ایک اک کر کے ہوئے رخصت مرے کنبے کے لوگ
گھر کے سناٹے سے ٹکراتی ہوائیں رہ گئیں

بادہ خانے شاعری نغمے لطیفے رتجگے
اپنے حصے میں یہی دیسی دوائیں رہ گئیں

راحت اندوری

Motivational poetry Motivational shayari in urdu hindi

Motivational poetry Motivational shayari in urdu hindi

اِنسان حاصل کی تمنا میں لاحاصل کے پیچھے دوڑتا ہے اُس بچے کی طرح جو تتلیاں پکڑنے کے مشغلے میں گھر سے بہت دور نکل جاتا ہے ، نہ تتلیاں ملتی ہیں نہ واپسی کا راستہ۔

محبت سفید لباس میں ملبوس عمرو عیار ہے ۔۔۔۔ ہمیشہ دو راہوں پر لا کھڑا کر دیتی ہے

https://shayari-urdu-hindi.com/urdu-shayari-best-shayari-love-poetry-sad-poetry/

محبت پانے والا کبھی اس بات پر مطمئن نہیں ہو جاتا کہ اُسے ایک دن کے لیے مکمل طور پر ایک شخص کی محبت حاصل ہوئی تھی ۔۔۔ محبت تو ہر دن کے ساتھ اعادہ چاہتی ہے۔

تعلق تو چھتری ہے ۔۔۔۔ ہر ذہنی ، جسمانی ، جذباتی غم کے آگے اندھا شیشہ بن کر ڈھال کا کام دیتی ہے۔

انسان کو تحقیق اور خواب سے برابر کی محبت ہے ۔۔۔۔ اور وہ اِن دونوں کے درمیان جُھولے کی مانند آتا جاتا ہے۔

اکثر اوقات سچ کڑوا نہیں ہوتا ۔۔۔ سچ بولنے کا انداز کڑوا ہوتا ہے۔

Motivational poetry Motivational shayari in urdu hindi

جب انسان محدود خواہشوں اور ضرورتوں کا پابند ہوتا ہے ، تو اُسے زیادہ جھوٹ بولنے کی ضرورت بھی پیش نہیں آتی۔

امید بھی بڑی دیوانی چیز ہے ، لمحوں میں ریگستانوں میں زیتون کے باغ لگا دیتی ہے۔

https://cacke-recipe.com/best-homemade-recipe-cheese-quiche-recipe

کسی دوسرے شخص کو عورت کو موم یا پتھر کا خِطاب دینے کا حق نہیں ہوتا وہ خود چاہے تو محبوب کےاشاروں کی سمت مڑتی رہتی ہےـ اور پتھر بننے کا فیصلہ کر لے تو کوئی شخص بھکاری بن کر بھی اُس کی ایک نگاہِ التفات نہیں پا سکتا۔

Motivational poetry

چھوٹا بن کے رہو تو بڑی بڑی رحمتیں ملیں گی… کیونکہ بڑا ہونے پر تو ماں بھی گود سے اتار دیتی ہے۔

معزز ترین آدمی کی پہچان یہ ہے کہ اس کے دل میں ہر ایک کے لئے محبت ہوتی ہے اور وہ آسانی سے کسی دوسرے کے ساتھ دشمنی پر آمادہ نہیں ہوتا۔ وہ چاندی کی پیالی کی طرح ہوتا ہے۔ اگر اُسے موڑنا چاہیں تو آسانی سے مڑ جائے گا۔ اور اگر آپ اسے توڑنا چاہیں تو وہ آسانی سے نہیں ٹوٹے گا۔

Best motivational shayari