Shayari photo Love shayari images sad shayari

ایک مدت ہوئی ہم نے دنیا کی ہر ایک ضد چھوڑ دی
ایک مدت ہوئی ہم نے دل کو وفا کے حوالے کیا

فرحت عباس

Shayari photo Love shayari images sad shayari

اس سے پہلے کہ تجھے اور سہارا نہ ملے
میں ترے ساتھ ہوں جب تک مرے جیسا نہ ملے

کم سے کم بدلے میں جنت اسے دے دی جائے
جس محبت کے گرفتار کو صحرا نہ ملے

مجھ کو اک رنگ عطا کر تا کہ پہچان رہے
کل کلاں یہ نہ ہو تجھ کو مرا چہرہ نہ ملے

لوگ کہتے ہیں کہ ہم لوگ برے آدمی ہیں
لوگ بھی ایسے جنہوں نے ہمیں دیکھا نہ ملے

بس یہی کہہ کے اسے میں نے خدا کو سونپا
اتفاقا کہیں مل جائے تو روتا نہ ملے

تم دعا کرتے رہو میرا سفر اچھا رہے
کوئی مل جائے مگر عقل کا اندھا نہ ملے

مجھ کو دیکھا تو مجھے ایسے لپٹ کر روئی
جیسے اک ماں کو کوئی گمشدہ بچہ نہ ملے

بد دعا ہے کہ وہاں آئیں جہاں بیٹھتے تھے
اور افکار وہاں آپ کو بیٹھا نہ ملے

افکار علوی

میں نے ہنس ہنس کے ترے غم کو چھپانا چاہا
پر مری آنکھیں اداکاری میں ناکام رہیں

افکار علوی

https://shayari-urdu-hindi.com/dard-bhari-shayari-photo-love-shayari-images-sad/

اب نہیں لوٹ کے آنے والا
گھر کھلا چھوڑ کے جانے والا

ہو گئیں کچھ ادھر ایسی باتیں
رک گیا روز کا آنے والا

عکس آنکھوں سے چرا لیتا ہے
ایک تصویر بنانے والا

لاکھ ہونٹوں پہ ہنسی ہو لیکن
خوش نہیں خوش نظر آنے والا

زد میں طوفان کی آیا کیسے
پیاس ساحل پہ بجھانے والا

رہ گیا ہے مرا سایہ بن کر
مجھ کو خاطر میں نہ لانے والا

بن گیا ہم سفر آخر نظمی
راستہ کاٹ کے جانے والا

اختر نظمی

Shayari photo Love shayari images sad shayari

دل کے ارمان دل کو چھوڑ گئے
آہ منہ اس جہاں سے موڑ گئے

وہ امنگیں نہیں طبیعت میں
کیا کہیں جی کو صدمے توڑ گئے

بادۂ باس کے مسلسل دور
ساغر آرزو کو پھوڑ گئے

مٹ گئے وہ نظارہ ہائے جمیل
لیکن آنکھوں میں عکس چھوڑ گئے

ہم تھے عشرت کی گہری نیندیں تھیں
آئے آلام اور جھنجھوڑ گئے

اختر انصاری

میں دل کو چیر کے رکھ دوں یہ ایک صورت ہے
بیاں تو ہو نہیں سکتی جو اپنی حالت ہے

مرے سفینے کو دھارے پہ ڈال دے کوئی
میں ڈوب جاؤں کہ تر جاؤں میری قسمت ہے

رگوں میں دوڑتی ہیں بجلیاں لہو کے عوض
شباب کہتے ہیں جس چیز کو قیامت ہے

لطافتیں سمٹ آتی ہیں خلد کی دل میں
تصورات میں اللہ کتنی قدرت ہے

اختر انصاری