Ghazal ssd love urdu ghazals best evers ghazals

Spread the love

Ghazal ssd love urdu ghazals best evers ghazals

دکھ دے کر سوال کرتے ہو تم بھی دوست کمال کرتے ہو دیکھ کر پوچھ لیا حال میرا چلو کچھ تو خیال کرتے ہو شہر دل میں اداسیاں کیسی یہ بھی مجھ سے سوال کرتے ہو مرنا چاہے تو مر نہیں سکتے تم بھی جینا محال کرتے ہو اب کس کس کی مثال دوں تم کو ہر ستم بے مثال کرتے ہو

You ask with sadness. You are also a good friend. Seeing that, you asked me. Come on, let’s think about something. How sadness is in the heart of the city. You also ask me if you want to die, but you can’t die. Whose example can I give you?

Ghazal ssd love urdu ghazals

گلزار ہست و بود نہ بیگانہ وار دیکھ

گلزار ہست و بود نہ بیگانہ وار دیکھ
ہے دیکھنے کی چیز اسے بار بار دیکھ

آیا ہے تو جہاں میں مثال شرار دیکھ
دم دے نہ جائے ہستی ناپائدار دیکھ

مانا کہ تیری دید کے قابل نہیں ہوں میں
تو میرا شوق دیکھ، مرا انتظار دیکھ

کھولی ہیں ذوق دید نے آنکھیں تری اگر
ہر رہ گزر میں نقش کف پائے یار دیکھ

Don’t look at Gulzar Hast and Bud as strangers
 
Don’t look at Gulzar Hast and Bud as strangers
The thing to see is to see it again and again
 
Here is where I see the example of mischief
Don’t give up, look at the entity unsustainable
 
I admit that I am not able to see you
So look at my passion, look at my waiting
 
If Zauq Deed’s eyes are open
Look at the pattern in every passage, my friend

https://shayari-urdu-hindi.com/sad-ghazals-best-evers-ghazal-urdu-hindi-ghazals/

Ghazal ssd love urdu ghazal

مو ج دریا

مضطرب رکھتا ہے میرا دل بے تاب مجھے
عین ہستی ہے تڑپ صورت سیماب مجھے

موج ہے نام مرا ، بحر ہے پایاب مجھے
ہو نہ زنجیر کبھی حلقہء گرداب مجھے

آب میں مثل ہوا جاتا ہے توسن میرا
خار ماہی سے نہ اٹکا کبھی دامن میرا

میں اچھلتی ہوں کبھی جذب مہ کامل سے
جوش میں سر کو پٹکتی ہوں کبھی ساحل سے

ہوں وہ رہرو کہ محبت ہے مجھے منزل سے
کیوں تڑپتی ہوں ، یہ پوچھے کوئی میرے دل سے

زحمت تنگی دریا سے گریزاں ہوں میں
وسعت بحر کی فرقت میں پریشاں ہوں میں

Moj Darya
 
My heart is troubled
The exact same entity is the tormented form mercury me
 
The wave is my name, the sea is my water
Don’t be chained to me
 
Tusan is like mine in water
My foot never got stuck with the thorn fish
 
I never jump with perfect passion
Excited, I sometimes hit my head off the beach
 
Be that as it may, I love the destination
Someone asked me why I was suffering
 
I avoid the trouble of the river
I am worried about the vastness of the sea

Leave a Reply

Your email address will not be published.