Shayari photo Love shayari images best poetry

Spread the love

Shayari photo Love shayari images best poetry

Kaun kehta hai ye Dil Pagal hai,
Pagalpan to bas ek Bahaana hai,
Ek bar Muskura kar to Dekho lo,
Ye Pagal Dil Tumhara Deewana hai..

Hasraton se Apki Raah Sajaa Denge,
Sapnon ki Doulat Aap par Luta Denge,
Na koi Phool hai aaj Mere Damaan Mein,
Lekin Aapke aane par Palkein Bichcha Denge..

Hamari dosti ka kitna faida uthhatay ho,
1msg bhej ke10 free pate ho,
hamare dil par kyon zulm dhate ho,
hamare msg forward kar k naye -naye dost banate ho.

Shayari photo Love shayari images best poetry

Baadnam to ho gaye hai, Hum Tumhare Pyaar me,
Pataa Nahi Kya – Kya Likhtey hai, Tumhare Intezaar me..

https://shayari-urdu-hindi.com/love-shayari-images-sad-shayari-photo-status/

بارش ہوئی تو پھولوں کے تن چاک ہو گئے
موسم کے ہاتھ بھیگ کے سفاک ہو گئے

بادل کو کیا خبر ہے کہ بارش کی چاہ میں
کیسے بلند و بالا شجر خاک ہو گئے

جگنو کو دن کے وقت پرکھنے کی ضد کریں
بچے ہمارے عہد کے چالاک ہو گئے

لہرا رہی ہے برف کی چادر ہٹا کے گھاس
سورج کی شہ پہ تنکے بھی بے باک ہو گئے

بستی میں جتنے آب گزیدہ تھے سب کے سب
دریا کے رخ بدلتے ہی تیراک ہو گئے

سورج دماغ لوگ بھی ابلاغ فکر میں
زلف شب فراق کے پیچاک ہو گئے

جب بھی غریب شہر سے کچھ گفتگو ہوئی
لہجے ہوائے شام کے نمناک ہو گئے

قید میں گزرے گی جو عمر بڑے کام کی تھی
پر میں کیا کرتی کہ زنجیر ترے نام کی تھی

جس کے ماتھے پہ مرے بخت کا تارہ چمکا
چاند کے ڈوبنے کی بات اسی شام کی تھی

میں نے ہاتھوں کو ہی پتوار بنایا ورنہ
ایک ٹوٹی ہوئی کشتی مرے کس کام کی تھی

وہ کہانی کہ ابھی سوئیاں نکلیں بھی نہ تھیں
فکر ہر شخص کو شہزادی کے انجام کی تھی

یہ ہوا کیسے اڑا لے گئی آنچل میرا
یوں ستانے کی تو عادت مرے گھنشیام کی تھی

بوجھ اٹھاتے ہوئے پھرتی ہے ہمارا اب تک
اے زمیں ماں تری یہ عمر تو آرام کی تھی

ہم نے ہی لوٹنے کا ارادہ نہیں کیا
اس نے بھی بھول جانے کا وعدہ نہیں کیا

دکھ اوڑھتے نہیں کبھی جشن طرب میں ہم
ملبوس دل کو تن کا لبادہ نہیں کیا

جو غم ملا ہے بوجھ اٹھایا ہے اس کا خود
سر زیر بار ساغر و بادہ نہیں کیا

کار جہاں ہمیں بھی بہت تھے سفر کی شام
اس نے بھی التفات زیادہ نہیں کیا

آمد پہ تیری عطر و چراغ و سبو نہ ہوں
اتنا بھی بود و باش کو سادہ نہیں کیا

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *